عبادات - جمعہ و عیدین

India

سوال # 26016

عید کے دن تکبیر سے متعلق سوال ہے ۔ عام طورپر ہر فرض کے بعد امام ’ اللہ اکبر‘ کہتے ہیں اور مقتدی اس کی اتباع کرتے ہیں۔ میں شافعی حنفی کے مسلک کے مطابق جاننا چاہتاہوں کہ کس فرض نماز کے بعد امام کو یہ تکبیریں کہنی چاہئے؟ نیز عید الاضحی میں بھی کس وقت تکبیر کہنی جائے؟اگرامام تکبیر بھول جائے تو پھراس کیے لیے کیا کیا جائے؟

Published on: Oct 2, 2010

جواب # 26016

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی(د): 1578=1196-10/1431

ایام تشریق یعنی نویں ذی الحجہ کی فجر کی نماز سے تیرہویں ذی الحجہ کی عصر کی نماز تک ہرفرض نماز کے بعد بلند آواز سے تکبیر تشریق کہنا سنت ہے۔ اس کے علاوہ عیدالفطر کی نماز کے لیے جاتے وقت آہستہ آواز سے تکبیر کہنا اور بقرعید کی نماز کے لیے جاتے وقت بلند آواز سے کہنا سنت ہے اور دونوں کے خطبوں میں تشریق پڑھنا امام کے لیے سنت ہے۔
ایام تشریق میں نماز کے بعد والی تکبیر امام کہنا اگر بھول جائے تو مقتدیوں کو چاہیے کہ فوراً تکبیر کہہ دیں یہ انتظار نہ کریں کہ جب امام کہے تب کہیں۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات