عبادات - جمعہ و عیدین

India

سوال # 155880

ہمارے گاوں میں الحمدلاللہ۳مسجدیں ہیں،ان میں سے ۲ ہماری ہیں اور ایک بریلویوں کی ہے ، ہمارے گاؤں میں بڑے زمانے سے اوپر کی مائک سے یعنی لاؤڈ سپیکر سے جمعہ کی تقریر ہوتی تھی ۔ الحمدلاللہ کسی کو کوئی شکایت نہیں لیکن کچھ دنوں پہلے ایک مفتی صاحب جو یہاں کے نہیں ہیں یہ کہہ کر کہ اس کی وجہ سے دوسروں کو تکلیف ہوتی ہے اوپر کی مائک بند کروا دیا جس کی بنا پر عورتوں نے شکایت بھی کی، لہذا ، کیا اوپر کی مائک یعنی لاؤڈ سپیکر سے جمعہ کے دن تقریر درست نہیں؟ خاص طور سے مسلمانوں کے محلہ میں؟ تفصیل کے ساتھ واضح کریں۔

Published on: Nov 28, 2017

جواب # 155880

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:154-102/sn=3/1439



صورت مسئولہ میں مفتی صاحب نے جو کچھ کیا درست کیا، محلہ اگرچہ مسلمانوں کا ہو؛ لیکن پھر بھی مریضوں، گھروں میں موجود بعض عورتوں کو اس طرح آمد ورفت کرنے والوں کو مسلسل مائک کی تیز آواز سے تکلیف پہنچتی ہے، جس کا لحاظ ضروری ہے، عورتوں کو دین کی باتوں سے واقف کرانے کے لیے کسی محفوظ ور مناسب جگہ پر پردے کا مکمل بند وبست کے ساتھ ہفتے میں یا مہینے میں ایک دو مرتبہ ”وعظ“ کا نظم کردیا جائے، کوئی دین دار عالم خاتوں وعظ کہہ دے یا پھر کسی متبع سنت معمر عالم دین سے پردے کے حائل کے ساتھ وعظ کہلادیا جائے۔



------------------



جواب صحیح ہے البتہ مزید بہ عرض ہے کہ قدیم طریقہ میں ایک خرابی یہ بھی ہے کہ باہر کے لوگ مختلف کاموں میں مشغول رہتے ہیں جس سے دینی بیان کی یک گونہ بے احترامی ہوتی ہے۔ (ن)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات