متفرقات - اسلامی نام

India

سوال # 161331

میرا نام " محمد صبیح الحق ہے ،میرے والد مرحوم کا نام محمد منسورل حق ہے ،جیسے کہ بر صغیر میں نام کے آگے محمد لگاتے ہیں، میرے بھی نام کے آگے محمد ہے لیکن میرا نام صبیح ہے ،اب میں نے اپنے بیٹے کا نام شیزان محمد صبیح رکھا ہے ، اس کا نام شیزان محمد اور ساتھ میں میں نے اپنا نام صبیح جوڑ دیا ہے ،شیزان محمد صبیح..کیا شیزان کے بعد محمد جوڑنا صحیح ہے ؟محمد میں نے اس لئے جوڑا ہے کیوں کہ میں چاہتا ہوں اس کے نام کے ساتھ محمد ہو،اور ۱ وجہ یہ بھی ہے کہ شیزان نام کا صحیح عربی معنی پتا نہیں چل رہا تھا، عربی میں ۱ نام شیزہ ہے جو لڑکی کا نام ہے ،اسی لئے میں نے اس کا نام شیزان محمد رکھا اور ساتھ میں اپنا نام صبیح ،کیا یہ نام صحیح ہے ؟ کیا نام کے بعد محمد لگانا صحیح ہے ؟اس کا عقیقہ ہو چکا ہے ۔

Published on: May 16, 2018

جواب # 161331

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1004-932/M=8/1439



”شیزان“ کا معنی ہمیں کتب لغت میں نہیں مل سکا، اس کی جگہ کوئی دوسرا مناسب نام رکھ لیں تو بہتر ہے، ”محمد“ نام کے بعد بھی لگاسکتے ہیں لیکن اچھا یہ ہے کہ شروع میں لگائیں اپنے بیٹے کے لیے ان ناموں میں سے کوئی تجویز کرسکتے ہیں حسان، سلمان، صفوان، ذکوان وغیرہ



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات