عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

Pakistan

سوال # 173143

عقیدہ یہ ہے کہ تمام لوگ اگر کسی کو نقصان پہنچانے کا ارادہ کریں اگر اللہ نے نفع پہنچانے کا ارادہ کیا ہے تو تمام لوگ اس کو نقصان نہیں پہنچا سکیں گے اسی اعتبار سے میرے دل میں ایک بات آئی اور بیٹھ گئی کہ دنیا میں دو طرح کے لوگ ہیں ایک تو راحت پہنچا رہے ہیں دوسرے تکلیف، انسان کو جو راحت مل رہی ہے اور جو تکلیف پہنچ رہی ہے سب اللہ رب العزت کی مشیت سے ہورہا ہے ، خوش قسمت ہیں وہ لوگ جن کو اللہ نے راحت پہنچانے کے لیے چنا ہے اور بدقسمت ہیں وہ لوگ جو تکلیف پہنچانے کے لیے چنے گئے ہیں، کیا یہ بات ٹھیک ہے جو میرے دل میں ہے؟

Published on: Oct 7, 2019

جواب # 173143

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 44-38/M=01/1441



اگر مراد یہ ہے کہ جو لوگ دوسروں کو راحت پہونچانے کے لئے چنے گئے ہیں وہ خوش قسمت لوگ ہیں اور جو لوگ دوسروں کو اذیت پہونچانے کے لئے چنے گئے ہیں وہ بدقسمت لوگ ہیں تو یہ بات ٹھیک ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات