عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

pakistan

سوال # 158740

کیاہم اپنی عبادات یا وظائف کا ثواب ذندہ یا مردہ لوگوں کو بخش سکتے ہیں؟ کیاہم اپنی عبادات یا وظائف کا حدیا حضرت محمد صلی الللہ علیہ وصلم اور شہدائے کربلا کی خدمت میں پیش کر سکتے ہیں؟

Published on: Feb 14, 2018

جواب # 158740

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 545-477/D=5/1439



(۱) ایصالِ ثواب زندہ اور مردہ دونوں کے لیے جائز ہے پس اپنی عبادات اوروظائف کا ثواب زندوں مردوں میں سے جسے چاہیں بخش سکتے ہیں وفي البحر من صام أو صلی أو تصدق وجعل ثوابہ لغیرہ من الأموات والأحیاء جاز ․․․ وبہذا علم أنہ لا فرق بین أن یکون المجعول لہ میتًا أو حیًا․



(۲) ہم اپنی عبادات کا ثواب حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم صحابہٴ کرام شہدائے بدر وحنین شہدائے احد وکربلا کو بھی بخش سکتے ہیں۔



 وفي الشامي: وقلت وقول علمائنا لہ أن یجعل ثواب عملہ لغیرہ یدخل فیہ النبي صلی اللہ علیہ وسلم فإنہ أحق بذلک حیث أنقذنا من الضلالة ففي ذلک نوع شکر وإسداء جمیل (۳/۱۵۳، شامي: زکریا)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات