عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

India

سوال # 155386

زید کا عقیدہ ہے کہ اللہ عرش پر ہے ذات کے اعتبار سے لیکن کیفیت کا علم صرف اللہ کو ہے۔ اس کا علم اور قدرت ہر جگہ اور ہر وقت ہے۔ اللہ کے دو ہاتھ ہیں اور دونوں داہنے ہاتھ ہیں، اللہ کے دو پیر ہیں۔ اللہ کا چہرہ ہے لیکن تمام اعضاء مخلوق سے جدا ہیں کیونکہ اس جیسی کوئی چیز نہیں اور کیفیت کا علم صرف اللہ کو ہے۔ اس عقیدہ کا کیا حکم ہے اور اس کی امامت میں نماز کا کیا حکم ہے؟

Published on: Nov 2, 2017

جواب # 155386

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 124-196/H=2/1439



اگر زید اللہ پاک کو عرش پرمستوی مانتا ہے البتہ استواء کی کوئی کیفیت متعین نہیں کرتا علم و قدرت کو ہر جگہ عام مانتا ہے جن اعضاء کا ذکر نصوص میں ہے انہیں بہ حیثیت صفات اللہ کے لیے ثابت مانتا ہے اور ان اعضاء کی کیفیات کو مقرر نہیں کرتا باقی جن اسلاف نے مناسب تاویل کی ہے اور وہ اسلافِ کرام اہل سنت و الجماعت میں شامل ہیں اُن اسلاف کی تغلیط و تفیلیل زیدنہیں کرتا تو زید کا عقیدہ درست ہے اور اس کی امامت بھی صحیح ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات