معاملات - سود و انشورنس

INDIA

سوال # 160671

جی ایس ٹی (G.S.T) کی وجہ سے پارٹیز (لوگوں) کو پیسہ ایک نمبر میں چاہئے، جس کی وجہ سے بینک سے لین دین کرنا پڑتا ہے، اور بینک کے لین دین پر بیاج لگ جاتا ہے، (اس کے لئے ہمیں کیا کرنا ہے) لون لینا جائز ہوگا؟ یا اس کے لئے کیا کرنا ہے؟ بغیر لون لئے کاروبار کرنا مشکل پڑ رہا ہے۔
مہربانی کرکے اس کے متعلق رہنمائی فرمائیں۔

Published on: May 13, 2018

جواب # 160671

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 813-742/D=8/1439



کاروباری ضرورت یا رقم کی حفاظت کی غرض سے بینک میں اکاوٴنٹ کھلوانے کی گنجائش ہے۔ لیکن بینک کی طرف سے اکاوٴنٹ میں جو سود کی رقم آجائے اسے نکال کر صدقہ کرنا بلانیت ثواب ضروری ہے خود اپنے استعمال میں لانا جائز نہیں۔



(۲) لون لینے میں سود ادا کرنا ہوگا جس طرح سود کا لینا حرام ہے اسی طرح سود دینا بھی حرام ہے پس لون لینا جائز نہیں ۔ پھر سود کی وجہ سے کاروبار میں بے برکتی پیدا ہوتی ہے اس لئے بہت احتیاط کی ضرورت ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات