معاملات - سود و انشورنس

India

سوال # 157324

حضرت، میں ایک مدرسہ کا مہتمم ہوں، میں مدرسہ سے کوئی تنخواہ نہیں لیتا ہوں، مدرسہ سے میرا گھر کچھ دور پر ۔ مدرسہ کی خاطر مدرسہ کے پاس ایک زمین خریدنا چاہتا ہوں، کیا اس کے لیے مائینورٹی کوپریشن یعنی اقلیتی تعاون (minority cooperation) سے لون لے سکتا ہوں؟

Published on: Jan 13, 2018

جواب # 157324

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:354-299/D=4/1439



مدرسہ سے کوئی تنخواہ نہیں لیتے اور اس کے انتظامات بحیثیت مہتمم حسبةً للہ دیکھتے ہیں یہ بہت ہی اجر وثواب کا عمل ہے، اللہ تعالیٰ اخلاص نصیب فرماوے اور برکت دے۔



آپ نے مکان کے لیے جس قرض لینے کی بابت دریافت کیا ہے اس میں سود کی ادائیگی بہرحال کرنی ہوگی، اور سود کا لینا جس طرح حرام ہے اسی طرح اس کا ادا کرنا بھی حرام اور ناجائز ہے۔ نیز سود پر لیے پیسے میں برکت بھی نہیں ہوتی۔ یمحق اللہ الربٰو․پس ایسے ناجائز کام سے بچیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات