عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

India

سوال # 4020

جلسہ میلاد النبی کے لیے جمع کئے جانے والے چندے سے خرچ کرنے کے بعد اس سے بچ جانے والی رقم کو بینک میں جمع کرنا اور اس پر سود لینا کیساہے؟ اوراس سود سے حاصل ہونے والی رقم کو مسلم بچوں کی تعلیم پر خرچ کرنا کیساہے؟

Published on: May 26, 2008

جواب # 4020

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 143/ م= 143/ م


 


مروجہ جلسہ میلاد النبی بہ ہیئت مخصوصہ جب بدعت ہے، تو اس مقصد کے لیے لوگوں سے چندہ جمع کرنا ہی درست نہ ہوا، اس سے بچ جانے والی رقم کو بینک میں جمع کرنا بھی صحیح نہیں اور اس پر سود لینا ناجائز ہے، سودی رقم کو مسلم بچوں کی تعلیم پر خرچ کرنا بھی ناجائز ہے، جو رقم بچ گئی ہے اس کو اصل مالکان (چندہ دہندگان) کو واپس کردی جائے۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات