عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

Pakistan

سوال # 173761

ہمارے کچھ دوستوں نے دنیا کے مختلف ممالک کے مل کر ایک گروپ بنایا ہے اور اس کا مقصد درود پاک پڑھنا اور اس کی تعداد شمار کرنا ہے، پہلی بار ٹارگیٹ ایک کروڑ کا تھا پھر پانچ کروڑ کیا پھر ایک ارب اور اب ایک کھرب رکھا گیاہے جو کہ تقریباً ساڑھے تین ارب کی تعداد ہوگئی ہے ، مقصد یہ ہے کہ روز حشر اللہ تعالی سے درخواست ہے کہ اس گروپ میں شامل افراد نے ایک کھرب درود پڑھاتھا اس کا حساب بھی اکٹھا کیا جائے ، اس گروپ میں لوگوں کی تعداد دن بہ دن بڑھ رہی ہے اور لوگ زیادہ سے زیادہ درود پڑھ کر تعداد گروپ میں شیئر کرتے ہیں اور ایک صاحب اس کو ٹوٹل کرکے بتاتے ہیں کہ اس ہفتے اتنا اکٹھا ہوگیاہے، کیا یہ صحیح ہے؟ لیکن یہ بدعت میں تو شمار نہیں ہوگا؟ براہ کرم، رہنمائی فرمائیں۔

Published on: Oct 27, 2019

جواب # 173761

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 124-89/SN=02/1441



مذکور فی السوال طریقہ غیر مناسب اور قابل ترک ہے، یہ ریا نمود نیز اخلاص میں خلل کا باعث ہو سکتا ہے، اس طرح کے نفل اعمال میں اخفاء افضل ہے؛ اس لئے آپ لوگ یہ سلسلہ بند کردیں؛ باقی لوگوں کو درود شریف کی کثرت کی ترغیب دینے میں کوئی حرج نہیں ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات