عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

United Kingdom

سوال # 16960



میں
نے یہ سوال کرنا ہے کہ ایک مسلمان کسی دوسرے انسان (استاد، والدین، سینئر وغیرہ)کے
پیر چھوئے عزت، احترام، سینئرٹی کے اعتبار سے، تو یہ عمل کیسا ہے؟ (جیسا کہ
ہندوستان میں عام ہے، عزت دینے کی علامت سمجھا جاتا ہے)۔ اگر یہ عمل کرنے والا
مسلمان ہو اور جس کے پیر چھوئے جائیں وہ غیر مسلم مثلاً ہندو ہو تو اب کیسا ہے؟
برائے کرم ضرور جواب دیجئے گا۔



Published on: Nov 16, 2009

جواب # 16960

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی(ب):1771=1608-11/1430



 



کسی
کی عزت واحترام میں اس کے پاوٴں کو چھونا، یہ اسلامی طریقہ نہیں ہے، البتہ اس کے
ہاتھ کو یا پیشانی کو بوسہ دے سکتے ہیں۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات