عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

Pakistan

سوال # 152533

سوال: مایوں ، سالگرہ ، وغیرہ کی تقریبات میں اگر شرکت نہ کی جائے مگر اس گھر سے ان تقریبات کا کھانا آجائے جو کہ عموما رشتہ دار کھانا بچ جانے کی صورت میں اپنے دوسرے رشتہ داروں کے گھر بجھوا دیتے ہیں ۔ اس کھانے کا کیا حکم ہے ؟ کیا بغیر شرکت کیے ان تقریبات کا کھانا کھانا جائز ہوگا ؟ اسی طرح ایسی شادی جس میں موسیقی ، تصویر سازی اور مخلوط محفل منعقد ہوئی تھی ۔ اس شادی کا بچا ہوا کھا نا گھر پر آجائے تو اسے کھانا کیسا ہے ؟

Published on: Jul 19, 2017

جواب # 152533

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 975-829/D=10/1438



ایسا کھانا، ناجائز تو نہیں ہوگا لیکن جب رسوم ومنکرات سے بچنا اور ان میں شریک نہ ہونا مقصود ہے تو یہ غرض پورے طور پر جبھی پوری ہوگی جب کھانے سے بھی بچا جائے؛ لہٰذا اگر کھانا واپس کرنے میں زیادہ فساد اور فتنہ کا اندیشہ ہو تو کسی غریب کو دیدیا جائے۔ ورنہ واپس کردیں اور نرمی سے عدم شرکت کی وجہ سے رسوم ومنکر کا ہونا بھی بتلادیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات