معاملات - وراثت ووصیت

Bangladesh

سوال # 158117

اگر وارثوں میں صرف ایک ہی بیٹی ہو اور بیٹا کوئی نہ ہو تو اس بیٹی کے علاوہ فوت شدہ کا بھائی یا بھتیجے وارث ہوں گے یا پورے کا پورا بیٹی کو ہی ملے گا؟

Published on: Jan 22, 2018

جواب # 158117

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:552-440/B=4/1439



اگر بیٹی کے ساتھ مرنے والے کا کوئی بھائی یا بھتیجہ یا چچا ہے تو اس ایک بیٹی کو پورے ترکہ میں سے آدھا حصہ ملے گا اور باقی ماندہ بھائی، بھتیجے یا چچا کو عصبہ کی حیثیت سے مل جائے گا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات