معاملات - وراثت ووصیت

India

سوال # 157211

دادا کی وراثت میں یتیم پوتے کا حصہ ہوگا یا نہیں؟ جبکہ پوتے کے والد اور چچا دونوں کا انتقال ہوگیا ہے ؟

Published on: Dec 14, 2017

جواب # 157211

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:320-249/sd=3/1439



اگر دادا کی کوئی نرینہ اولاد موجود ہو، تو صورت مسئولہ میں پوتے کو شرعاً دادا کے ترکہ میں حصہ نہیں ملے گا؛ البتہ دادا اپنی زندگی میں اپنی جائداد میں سے مناسب مقدار پوتے کو ہبہ کرسکتا ہے ، نیز پوتے کے حق میں تہائی ترکہ کے بہ قدر وصیت بھی کرسکتا ہے ، اس مسئلے سے متعلق حضرت مفتی محمد شفیع صاحب رحمہ اللہ کا ایک رسالہ: یتیم پوتے کی میراث کے نام سے موجود ہے ۔ اُس میں نقلی اورعقلی دلائل کے ساتھ بہت تفصیل سے اس مسئلے کو بیان کیا گیا ہے ،یہ رسالہ جواہرالفقہ کی ساتویں جلد میں شامل ہے ۔



-----------------------------



نوٹ: جواب درست ہے نیز جواب کا دوسرا جز یہ ہے کہ اگر دادا کی کوئی نرینہ اولاد دادا کے انتقال کے وقت باحیات نہ رہی ہو تو پھر پوتے وارث ہوں گے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات