متفرقات - حلال و حرام

Pakistan

سوال # 157777

بعد از سلام امید کرتا ہوں کہ آپ حضرات خیریت سے ہوں گے ۔ میرا سوال یہ ہے کہ ہمارے ملک پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا میں حکومت نے آئمہ کرام کو سرکاری تنخواہیں جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ اور وہ ہاں جس پارٹی کی حکومت ہے اسکے تعلقات اسلام مخالف تنظیموں سے ہے ۔ اس صورتحال میں آئمہ کرام کا اس سرکار سے تنخواہیں لینا جائز ہے ؟

Published on: Jan 24, 2018

جواب # 157777

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:418-360/D=5/1439



اگر کسی خلاف شرع امر کا ارتکاب لازم نہ ہو اور ناجائز دباوٴ کا خطرہ بھی نہ ہو، نیز مقامی علماء اس تنخواہ میں کوئی مضائقہ نہ محسوس کریں تو ائمہ کرام کے لیے تنخواہ لینے میں حرج نہیں۔



حاصل یہ کہ مقامی علماء کرام کی ہدایت، مشورہ اور فتوے کے مطابق عمل کریں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات