متفرقات - حلال و حرام

India

سوال # 147596

میرا دوست بینک آف انڈیا میں کیشیئر ہے ، کیا میں اس کے گھر پہ رات کا کھانا کھاسکتاہوں؟کیا ہم اس کی آمدنی کو حلال سمجھ سکتے ہیں؟

Published on: Jan 8, 2017

جواب # 147596

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 264-280/Sn=4/1438



 



کیشئر کے ذمے جائز ناجائز ہرطرح کے کام ہوتے ہیں، اگر بینک میں آپ کے دوست کے ذمے داریوں میں زیادہ تر کام ناجائز ہیں اور اس ملازمت کے علاوہ ان کے پاس کوئی اور مباح ذریعہ آمدنی نہیں ہے یا ہے تو لیکن بہت معمولی تو آپ ان کے یہاں کھانا نہ کھائیں الا یہ کہ وہ حلال آمدنی سے یا کسی سے قرض لے کر کھانے کا بند وبست کریں تو پھر کھانے کی گنجائش ہے۔ آکل الرباء کاسب الحرام لو أہدی علیہ أو أضافہ وغالب مالہ حرام لا یقبل ولا یوٴکل مالم یخبرہ أن ذلک المال أصلہ حلال ورثہ أو استقرضہ الخ (الفتاوی الہندیة ۵/ ۳۴۳، ط: زکریا)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات