عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 158068

احرام کی حالت میں اگر دَم واجب ہو گیا تو اسے احرام کی حالت میں ہی ادا کیا جائے یا بعد میں بھی کرسکتے ہیں؟

Published on: Jan 15, 2018

جواب # 158068

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:404-341/sd=4/1439



 دم کی ادائے گی کے لیے حات احرام میں ہونا شرط نہیں ہے ، احرام سے نکلنے کے بعد بھی دم دیا جاسکتا ہے ۔ یستفاد : قال ابن عابدین : (قولہ الواجب دم) (تنبیہ)فی شرح النقایة للقاری: ثم الکفارات کلہا واجبة علی التراخی، فیکون موٴدیا فی أی وقت۔ ( رد المحتار مع الدر المختار : ۵۴۳/۲، باب الجنایات فی الحرم ، ط: دار الفکر، بیروت )البتہ دم کا حدود حرم میں ذبح کرنا ضروری ہے ، اگر حدود حرم کے باہر ذبح کیا ، تو کفارہ اداء نہیں ہوگا ۔والثامن ذبحہ فی الحرم، فلو ذبح فی غیرہ لا یجزئہ عن الذبح ۔ ( غنیة الناسک ، ص: ۲۶۲) 



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات