عبادات - حج وعمرہ

india

سوال # 154352

میری امی کی عمر ۷۰ سال کے قریب ہے، اور ہم انہیں عمرہ کرنا چاہتے ہیں، کیوں کہ یہ ان کی تمنا ہے اور وہ شوگر کی مریض ہیں، مگر کعبہ دیکھا چاہتی ہیں، کوئی محرم نہ ہونے کی صورت میں جیسے باپ اور بھائی ، کیا ہم اپنی امی کو بہنوئی کے ساتھ بھیج سکتے ہیں؟ اور کیوں کہ میری بہن اپنی فیملی میں زیادہ مگن رہتی ہے تو کیا امی کی خدمت کے لیے ہم امی کے ساتھ بہن بہنوئی کو عمرہ کراسکتے ہیں؟ حالانکہ فلیٹ ایک ہو مگر کمرے علیحدہ ہوں۔

Published on: Sep 23, 2017

جواب # 154352

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 1286-1059/D=12/1438



بہنوئی یعنی والدہ کے داماد ان کے محرم ہیں، لہٰذا ان کے ساتھ عمرہ کے لیے بھیجنا جائز ہے پھر جب بہن بھی ساتھ رہیں گی تو اور سہولت ہوگی۔ ان شاء اللہ



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات