عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 147114

میرے سسر گذشتہ سال تیس سال سے دماغی بیماری میں مبتلاء تھے، ایک مہینہ پہلے ان کا انتقال ہوگیا، میری ساس نے اپنی بیٹی اور داماد کے ساتھ عمرہ کرنے کا پروگرام بنایا تھا تو کیا وہ عمرہ کے لیے جاسکتی ہیں یا ان کو عدت گذارنی ہے؟

Published on: Jan 5, 2017

جواب # 147114

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 252-185/Sd=4/1438



 



جی نہیں! آپ کی ساس کا عدت میں عمرہ کے لیے جانا جائز نہیں ہے: المعتدة لا تسافر لا للحج ولا لغیرہ الخ (الفتاوی الہندیة ۱/ ۵۳۵)



نوٹ: وفات کے وقت سے ایک سو تیس دن عدت کے ہیں انھیں گھر پر گذارنے کے بعد گھر سے نکلیں۔ (د)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات