عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 146440

بعض لوگ کہتے ہیں کہ فرض حج کرنے کے بعد بار بار حج وعمرہ کرنے کی بجائے غرباء ومساکین کی مدد کرنا زیادہ افضل ہے۔ کیا ایسا کہنا درست ہے؟

Published on: Dec 17, 2016

جواب # 146440

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 195-195/B=3/1438



 



حدیث شریف میں آیا ہے کہ ایک فرض حج ادا کرنے کے بعد بھی حاجی کو ہر ۴- ۵/ سال کے بعد نفلی حج اور عمرہ کے لیے جاتے رہنا چاہئے۔ حضرت امام اعظم ابوحنیفہ رحمة اللہ علیہ بھی پہلے اسی نظریہ کے قائل تھے، لیکن جب انہوں نے متعدد حج نفلی کئے اور حج میں جو مشقت دیکھی تو پھر اپنی رائے بدل دی اور فرمایا کہ غریبوں کی مدد کرنے سے نفلی حج کرنے میں زیادہ فضیلت اور اجرو ثواب ہے۔ حج سے آنے کے بعد غریبوں کی مدد بھی کرے، حج کرنے سے اللہ تعالیٰ مالداری نصیب فرماتا ہے، اس طرح دونوں جمع ہوسکتے ہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات