عقائد و ایمانیات - حدیث و سنت

Pakistan

سوال # 169538

اگر کسی شخص کا عقیقہ اس کے ماں باپ ساتویں روز نہ کرسکے یا کسی وجہ سے نہیں کرسکے تو اب وہ اس قابل ہے کہ وہ اپنا اور اپنے اہل خانہ کا عقیقہ کرسکتاہے تو کیا یہ صحیح ہوگا؟ اور دوسرا سوال یہ ہے کہ وہ ایک گائے کرسکتاہے عقیقہ میں میاں بیوی اور دو لڑکوں کی طرف سے ؟ کیا عقیقہ ہوجائے گا؟

Published on: Mar 26, 2019

جواب # 169538

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 761-671/M=07/1440



(۱) جی ہاں وہ شخص اپنا اور اپنے اہل خانہ کا عقیقہ کرسکتا ہے اگر استحبابی وقت نکل چکا ہے تو جب چاہے کرسکتا ہے عقیقہ صحیح ہو جائے گا؛ البتہ ساتویں روز کا خیال کرلینا اچھا ہے۔



(۲) جی ہاں ایک گائے میں میاں بیوی اور دو لڑکوں کی طرف سے عقیقہ ہو جائے گا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات