عقائد و ایمانیات - حدیث و سنت

India

سوال # 166528

قیلولہ کرنا سنت ہے اس کی کوئی دلیل ہے تو ذرا بتائیں۔

Published on: Oct 28, 2018

جواب # 166528

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:198-118/sd=2/1440



 قیلولہ کرنا ، یعنی : دوپہر میں کھانا کھانے کے بعد تھوڑی دیر آرام کرنا مسنون ہے ، اس سے رات کی عبادت میں مدد ملتی ہے ، حدیث میں ہے کہ “قیلولہ کیا کرو؛ اس لئے کہ شیطان قیلولہ نہیں کرتا”ایک دوسری حدیث میں ہے کہ قیلولہ کے ذریعے رات کی عبادت میں تعاون حاصل کرو ۔



عن ابن عباس رضی اللّٰہ عنہما عن النبی صلی اللّٰہ علیہ وسلم قال: استعینوا بطعام السحر علی صیام النہار والقیلولة علی قیام اللیل۔ (سنن ابن ماجة، کتاب الصیام / باب ما جاء فی السحور، رقم: ۱۶۹۳ )وفی روایة: وبقیلولة النہار علی قیام اللیل۔ (صحیح ابن خزیمة رقم: ۱۹۳۹)اخرج الطبرانی فی الأوسط بسندہ عن أنس رضی اللّٰہ عنہ عن النبی صلی اللّٰہ علیہ وسلم: قیلوا؛ فإن الشیطان لا یقیل۔ (فتح الباری، کتاب الاستئذان / باب القائلة بعد الجمعة)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات