عقائد و ایمانیات - حدیث و سنت

Pakistan

سوال # 165211

کیا یہ بات درست ہے کہ ضعیف حدیث پر عمل کے حوالہ سے تین اقسام کی رائے ہیں، کچھ اہلِ علم ضعیف حدیث کو کسی بھی صورت حجت (قابلِ عمل) تسلیم نہیں کرتے ، کچھ اہلِ علم تمام ضعیف احادیث کو بغیر کسی شرط کے قابل حجت سمجھتے ہیں، جبکہ اہلِ علم کا تیسرا طبقہ کچھ شرائط کے ساتھ صرف فضائل میں ضعیف احادیث کو قابلِ حجت سمجھتے ہیں؟ اگر یہ بات درست ہے تو تیسرے طبقہ میں احناف کے علاوہ اور کس مسلک کے اہلِ علم آتے ہیں؟

Published on: Oct 13, 2018

جواب # 165211

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 45-9/S=1/1440



دارالعلوم دیوبند کے استاذ حدیث مولانا عبد اللہ معرفی صاحب مدظلہ کی تصنیف ”فضائل اعمال ایک اصولی جائزہ“ میں ضعیف حدیث پر عمل کے سلسلہ میں جو مختلف نقطہائے نظر پائے جاتے ہیں ان کا محدثین اور فقہاء کے اقوال کی روشنی میں تفصیل سے جائز لیا گیا ہے۔ یہ کتاب دارالعلوم دیوبند کے ویب سائٹ پر موجود ہے، مطالعہ کر لیا جائے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات