عقائد و ایمانیات - فرق باطلہ

Pakistan

سوال # 42676

اس مسئلہ میں کہ ہمارے کالج میں ایک استاد ہے جو کہ قادیانی ہے، اس کو نوکری دیتے وقت ہمیں اس بات کا علم نہیں تہا، جبکہ یہ استاد اپنا کام اچہے طریقے سے انجام دیتا ہے، وقت پہ آتا ہے، اپنے کام میں غفلت نہیں کرتا اور نہ ہی اپنے دین کی پرچار یا اس بارے میں کسی قسم کی گفتگو کرتا ہی کیا ایسے شخص کو نوکری سے نکال دینا چاہیے؟ یا رکہنا چاہیے؟

Published on: Dec 3, 2012

جواب # 42676

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 1344-1337/N=1/1434

قادیانی لوگ اپنے خلافِ اسلام غلط اور گمراہ کن عقائد کی وجہ سے تمام اہل حق علمائے اسلام کے نزدیک بالیقین زندیق ومرتد اور دائرہٴ اسلام سے خارج ہیں، اور شریعت میں زندیق ومرتد: کفار ومشرکین سے بھی زیادہ بدتر اور برے ہوتے ہیں، ان سے کسی بھی قسم کا میل جول اور تعلقات وروابط رکھنا یا سلام وکلام وغیرہ کرنا یا ان کو اپنے کالج، فیکٹری یا کمپنی وغیرہ میں ملازم رکھنا شرعی اعتبار سے ہرگز درست نہیں، اس لیے آپ اپنے کالج کے قادیانی استاذ کو جلد از جلد کالج کی ملازمت سے برخواست کردیں، اس کو ملازمت پر برقرار رکھنا جائز نہیں ہے۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات