A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined offset: 0

Filename: models/quesans_details.php

Line Number: 93

A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Trying to get property of non-object

Filename: models/quesans_details.php

Line Number: 93

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /homepages/36/d162900626/htdocs/darulifta/system/core/Exceptions.php:186)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 689

Darul Ifta, Darul Uloom Deoband India

India

سوال # 156656

سوال: ایک کاروباری شخص مجھے کاروبار شروع کرنے کیلئے رقم دے رہا ہے ، پوری رقم اس کی ہوگی میں کچھ بھی نہیں انویسٹ کروں گا اور کاروبار بھی جائز ہے ، میری بنا سرمایہ کاری کیے اس کاروبار میں پارٹنر کے طور پر طے شدہ فیصد کے حساب سے نفع لینا جائز ہے ؟

Published on: Dec 9, 2017

جواب # 156656

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:294-242/L=3/1439



صورتِ مسئولہ میں اس کاروبار کی حیثیت مضاربت کی ہوگی جس میں منافع میں دونوں کے لیے حسبِ معاہدہ فیصد کے اعتبار سے نفع لینے کی گنجائش ہوگی اور اگر نقصان ہوجائے تو اولاً اس کی تلافی نفع سے اور پھر راس المال (سرمایہ) سے کی جائے گی۔ مزید تفصیل کے لیے آپ بہشتی زیور میں مضاربت کا بیا ن پڑھ لیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات