india

سوال # 155594

مفتی صاحب، میرے بینک کھاتے میں جو تنخواہ آتی ہے اور وہ پیسے بینک میں ہی رہتے ہیں جس پر کچھ سود کا پیسہ بڑھ جاتا ہے ، کیا اس پیسے کو انکم ٹیکس میں استعمال کرسکتے ہیں کیوں کہ ہمیں سال کے حکم پر ٹیکس دینا ہوتا ہے ؟

Published on: Dec 7, 2017

جواب # 155594

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:97-31/sn=3/1439



اگر آپ کا کھاتا سرکاری بینک میں ہے تو اس سے اپنی رقم پر حاصل شدہ سود کی رقم ”انکم ٹیکس“ میں دینے کی گنجائش ہے۔ 



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات