india

سوال # 161323

حضرت، میری بہو کا انتقال یکم اپریل ۲۰۱۸ء کو ہوا۔ مرحومہ کا ایک بیٹا ہے اب اس بچے کی یعنی میرے پوتے کی پرورش کس کے ذمہ رہے گی؟ والد کی، نانا کی، یا دادا کی؟

Published on: May 19, 2018

جواب # 161323

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 895-775/D=8/1439



پوتے کی پرورش کا حق اس کی نانی کو ہے سات سال کی عمر تک نانی پرورش کرے اور خرچ بچہ کے پاس مال ہوتو اس میں سے دیا جائے ورنہ دادا کے ذمہ ہوگا اور اگر نانی نہ ہو یا وہ پرورش کرنے کے لئے تیار نہ ہو تو پھر دادی کو حق حاصل ہے۔ اگر دادی نہ ہو یا وہ پرورش کرنے پر آمادہ نہ ہو تو اگر بچہ کی کوئی بہن ہو تو اسے ترجیح ہوگی ورنہ اولاً خالہ پھر پھوپھی کو پرورش کا حق حاصل ہوگا۔ بچہ کے اخراجات بہر صورت یا تو اس کے مال میں سے ادا کیا جائے اگر اس کی ملکیت میں مال ہو ورنہ پھر دادا کے ذمہ ہوگا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات