India

سوال # 165196

اگر زید چوری کرتا ہے اور بعد میں اسے غلطی کا احساس ہو جاتا ہے۔ پھر وہ اللہ سے سچے دل سے توبہ کر لیتا ہے، تو کیا اس کا گناہ معاف ہو جائے گا؟ کیا زید کو ان لوگوں کو بتانا پڑے گا جس کی اس نے چوری کی کہ میں نے آپ کا مال چرایا ہے؟

Published on: Oct 3, 2018

جواب # 165196

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 25-30/M=1/1440



صدق دل سے توبہ کرنے کے بعد چوری کا گناہ تو معاف ہو جاتا ہے لیکن جو چیز چوری کی ہے ا س کو واپس کرنا ضروری ہوتا ہے مالک کو اگرچہ بتانا ضروری نہیں کہ میں نے آپ کا مال چرایا ہے لیکن مالک تک اس کا مال کسی بھی عنوان سے پہنچا دینا لازم ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات