عبادات - احکام میت

India

سوال # 153321

ایک آدمی شراب پی کر نشے کی حالت میں مرگیا، اس کی نماز جنازہ پڑھائی جائے یا نہیں گچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ اس کی نماز جنازہ ادا نہیں کی جائے کیونکہ نماز جنازہ میت کے لیے دعائے مغفرت ہے ۔شراب کے نشے میں انتقال ہوا اس وجہ سے نماز ادا نہیں کرنی چاہئے ۔ جواب مرحمت فرمائیں۔

Published on: Aug 3, 2017

جواب # 153321

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 1220-1121/H=11/1438



اس کی نمازِ جنازہ ادا کی جائے گی فمن قتل نفسہ عمدًا یغسل ویصلی علیہ بہ یفتی اھ در مختار وفي شرحہ الفتاوی رد المحتار (قولہ بہ یفتی) لأنہ فاسق غیر ساع في الأرض بالفساد وإن کان باغیًا علی نفسہ کسائر فساق المسلمین زیلعي اھ (۱/۵۸۴، مطبوعہ نعمانیة، دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات