عبادات - احکام میت

India

سوال # 149922

ہم یہ بات جاننا چاہتے ہیں کہ اگر میرا پڑوسی ہندو بھائی مرتا ہے تو کیا اس کے ساتھ انتم سنسکار میں جاسکتے ہیں یا گھر اس کے جاکر تھوڑی دیر تک بیٹھ سکتے ہیں؟ ان کی دل جوئی کے لیے کیا کرسکتے ہیں؟ جب کہ اسلام کا سب سے بڑا عمل عالی اخلاق ہونا ہے۔ اس کا جوا ب حوالہ کے ساتھ دیں۔

Published on: Mar 12, 2017

جواب # 149922

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 690-687/L=6/1438



کسی مصلحت یا ضرورت سے غیر مسلموں سے ملنا جلنا ان کے دکھ درد میں شریک ہونا اور انسانیت کے ناطے ان کا تعاون کرنا خاص کر جب کہ پڑوسی ہوں شرعاً جائز ہے؛ البتہ ان کے مذہبی معاملات اور مذہبی رسومات میں شرکت کرنا جائز نہیں ہے؛ لہٰذا اگر کوئی کافر بیمار ہوگیا یا اس کے یہاں کسی کا انتقال ہو گیا تو اس کی عیادت اور تعزیت کرنا تو جائز ہے مگر میت اور جنازہ کو لے کر چلنا اور ان کے دیگر مذہبی رسومات میں شرکت کرنا جائز نہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات