عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 166970

میں ایک مسجد میں امام ہوں اور اس مسجد میں دونوں طرح کے لوگ ہیں مولانا سعد والے بھی اور شوری والے بھی کیا ان لوگوں کی صحیح رہنمائی کرنا میری اوپر ضروری ہے اگر میں ان کے معاملہ میں خاموش رہوں تو میں گنہگار تو نہیں ہوں گا؟ حضرت جواب مرحمت فرمایں۔

Published on: Dec 24, 2018

جواب # 166970

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 265-249/D=04/1440



آپ قرآن و حدیث کی باتیں لوگوں کو بتلائیں خواہ کوئی مستند و معتبر کتاب سنائیں مثلا حیوة المسلمین ، تعلیم الدین وغیرہ باقی اختلافی معاملہ میں خاموش رہنا بہتر ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات