عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 166153

میرا سوال یہ ہے کہ کیا ہر مسلمان کو جماعت میں نکلنا ضروری ہے؟ اور جو حضرات جماعت میں وقت لگا کر آتے ہیں ان کا کہنا ہے کہ مدرسے کی پڑھائی نہیں شرط ہے، ہر حافظ ہر قاری ہر مفتی ہر مولانا کو ایک سال لگانا فرض ہے نہیں تو دین مکمل نہیں ہوگا، آپ سے گذارش ہے کہ آپ میری بات پر غور فرما کر جواب دیں ، عین نوازش ہوگی۔

Published on: Nov 14, 2018

جواب # 166153

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:246-211/B=3/1440



جماعت میں نکلنا ہی ضروری نہیں، پھر ایک سال کے لیے نکلنا کیونکر ضروری ہوگا، یہ تو ایک مستحب کام ہے جس کا جی چاہے نکلے جس کا جی چاہے نہ نکلے، عالم ومفتی تو قرآن وحدیث کی پوری تعلیم حاصل کیے ہوئے ہوتا ہے اس کو جماعت میں نکلنے کی کیا ضرورت ہے، وہ اپنے علمی کام درس وتدریس اور فتوی نویسی میں لگا ہوا ہے جو جماعت میں نکلنے سے کہیں زیادہ اہم ہے۔ یہ سب جہالت کی باتیں ہیں اور غلو کی باتیں ہیں، اور اعتدال سے ہٹی ہوئی باتیں ہیں۔ ان سے بچنا ضروری ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات