عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 156114

حضرت، میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ امر بالمعروف اور نہی عن المنکر جو کہ قرآن اور حدیث میں آیا ہے اس کے متعلق امر بالمعروف پر تو تبلیغ بھی ہوتی ہے لیکن نہی عن المنکر سے کیا مراد ہے؟ جوکہ مجھے سمجھ میں نہیں آتا، اکثر سننے میں آیا کہ امر بالمعروف سے ہی منکرات ختم ہو جاتے ہیں، لیکن اگر امر بالمعروف سے ہی منکرات ختم ہو تے ہیں تو قرآن اور حدیث میں امر بالمعروف کے ساتھ نہی عن المنکر کا تذکرہ کیوں آیا ہے؟
براہ کرم اس پر تھوڑی روشنی ڈالئے۔ شکریہ

Published on: Dec 9, 2017

جواب # 156114

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:144-6168/sd=3/1439



جس طرح اسلام میں امر با لمعروف ، یعنی : اچھی باتوں کی تلقین کرنے کی اہمیت ہے ، اسی طرح برائیوں اور گناہ کے کاموں سے روکنے اور حسب استطاعت اُن پر نکیر کا حکم ہے ، نہی عن المنکر ایک مستقل فریضہ ہے ، یہ بات غلط ہے کہ صرف امر بالمعروف کافی ہے ، اسی سے منکرات ختم ہوجاتے ہیں، حسب حیثیت اور استطاعت ہر شخص پر نہی عن المنکر کی بھی ذمہ داری ہے ؛ البتہ علماء نے امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کے شرائط اور اُس کے اصول بتائے ہیں ،تفصیل کے لیے دیکھیے :معارف القرآن:سورہ آل عمران ، آیت : ۱۰۵۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات