عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 151680

چند غیر مقلدین جماعت کے ساتھیوں کو گمراہ کررہے ہیں اور اب تک ہماری مسجد میں کئی لوگوں کو غیر مقلدبنا چکے ہیں۔ یہ دیکھ کر جب میں اور چند میرے ساتھ علمائے کرام کے پاس جاکر کچھ مسائل اور ہر مسئلہ پر تین چار دلیل سیکھ کر آتے ہیں اور جب ہم ان غیر مقلدین کو منہ توڑ جواب دیتے ہیں تو جماعت کے ساتھی اعتراض کرتے ہیں کہ یہ کام ہمارا نہیں، ہمارا کام ساتھی کو لاکر جماعت میں جوڑنا ہے اور اللہ کے نام پر اس کو چھوڑ دینا ہے اور اگر وہ گمراہی کی طرف جائے تو دعا کرنا ہے، اور کہتے ہیں کہ اگر آپ کو یہ کام کرنا ہے تو مرکز سے اجازت لے کر آوٴ، اس بات پر آپ کی کیا رائے ہے؟

Published on: Jun 15, 2017

جواب # 151680

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 932-992/B=9/1438



گمراہ لوگوں کی باتوں کا منھ توڑ جواب دینا بھی دین کا کام ہے، جماعت کے ساتھیوں کا اعتراض صحیح نہیں ہے، پیسوں کے لالچ میں وہ لوگ غیرمقلد ہوئے ہوں گے۔ ان کو غیرمقلد ہونے سے پہلے بھی تو مرکز سے اجازت لینی چاہیے تھی، اس وقت مرکز سے اجازت کیوں نہیں لیں۔ یہ سب باتیں ساتھیوں کی گمراہی کی باتیں ہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات