عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 151045

کیا فیس بک، وہاٹس اَیپ اور کوئی بھی شوسل میڈیا کے ذریعہ کوئی حدیث، قرآن کی آیتیں، قرآن کا بیان یا اور کوئی دینی باتیں شیئر کرسکتے ہیں یا نہیں؟ اکثر دیکھنے میں آتا ہے کہ بات بغیر تحقیق کے کوئی بھی شیئر کردیتا ہے اور بہت سے لوگ بغیر تحقیق کے ان باتوں پر عمل کرنا شروع کردیتے ہیں۔ کیا یہ ذریعہ صحیح ہے؟

Published on: May 18, 2017

جواب # 151045

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 743-591/D=8/1438



قرآن کی آیتیں، قرآن کا بیان یا کوئی دینی بات جو مستند طور پر آپ کو معلوم ہو وہ دوسرے کو بھیج سکتے ہیں، لیکن اس بھیجنے کا کوئی نیک مقصد ہونا چاہیے، صرف کھیل اور تفریح مقصود نہ ہو، نیز حدیث مستند ہو، آیتوں کا ترجمہ کسی معتبر اور معتمد عالم کا کیا ہوا ہو اسی طرح دین کی بات بھی معتبر طریقہ سے آپ کو معلوم ہوئی ہو۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات