عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

Pakistan

سوال # 10387

مجھے مشت زنی کی عادت پڑگئی تھی اب میں اس سے جان چھڑانا چاہتا ہوں لیکن لاکھ کوشش کے باد بھی چھوٹ نہیں رہی ہے۔ علمائے کرام نے کہا کہ ذکر کیا کرو ایسا بھی کیا لیکن بے سود۔ اب آپ کوئی آسان حل بتائیں (برائے کرم جو حدیث ہو ساتھ میں اس کا ترجمہ بھی لکھ دیں)۔

Published on: Feb 1, 2009

جواب # 10387

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 149=138/ ب


 


حدیث شریف میں آیا ہے : ناکحُ الید ملعونٌ، یعنی مشت زنی کرنے والا ملعون ہے۔ ایک دوسری حدیث میں آیا ہے کہ مشت زنی کرنے والے کی انگلیاں قیامت کے دن گا بھن (حاملہ) اٹھائی جائیں گی اور تمام انسانوں کے سامنے ذلیل و رسوا ہوگا۔ جب شرابی شراب سے توبہ کرسکتا ہے اور اسے چھوڑسکتا ہے اور زنا کار زنا کو چھوڑکر سچی پکی توبہ کرسکتا ہے تو آپ بھی پکا عہد و پیمان کرلیجے ان شاء اللہ یہ عادت چھوٹ جائے گی۔ دو رکعت نماز حاجت پڑھ کر دعا بھی کریں۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات