India

سوال # 735

براہ کرم، کیا آپ بتاسکتے ہیں کہ شوہر اپنی مطلقہ بیوی کو جو نان و نفقہ دے گا اس کی اصل مقدار کیا ہے؟ ہمیں معلوم نہیں کہ اصل میں کتنا ادا کرنا چاہیے خواہ پیسہ ہو یا سامان؟


والسلام

Published on: Jun 7, 2007

جواب # 735

بسم الله الرحمن الرحيم

(فتوى: 562/ب=554/ب)


 


زمانہ اور مقام کے لحاظ سے ایک آدمی کا اوسط درجہ کا جس قدر خرچ آئے (چار سمجھدار اور تجربہ کار آدمی اسے طے کریں) وہی مقدار نان و نفقہ میں بیوی کودی جائے گی اس کی مقدار دائمی طور پر کوئی متعین نہیں ہے۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات