India

سوال # 159744

اگر کسی شخص کی ڈاڑھی ایک مشت ہی ہو اور کہیں کہیں سے بے ترتیب نکلی ہوئی ہو یا دیکھنے میں اچھی معلوم نہ ہوتی ہو تو کیا صرف اس جگہ کے حصے کو درست کرسکتے ہیں؟ نیز کوئی ایسی کتاب کا نام بتادیں جس میں تفصیل سے ڈاڑھی کے متعلق مسائل ہوں۔ جزاک اللہ

Published on: Mar 25, 2018

جواب # 159744

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:836-673/sd=7/1439



(۱) اگر ڈاڑھی ایک مشت کے بقدر ہو، تو اس کے بے ترتیب بالوں کو کاٹنا جائز نہیں ہے ؛ البتہ ایک مشت سے زائد بے ترتیب بالوں کو کاٹنے کی گنجائش ہے ۔



(۲) داڑھی اور بالوں کے شرعی احکام : مولفہ : مفتی احسان اللہ شائق (جامعة الرشید ، پاکستان ) داڑھی کا وجوب : مولفہ : حضرت شیخ الحدیث مولانا زکریا صاحب کاندھلوی رحمہ اللہ ۔ 



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات