معاملات - بیع و تجارت

Pakistan

سوال # 173728

(۱) پلاٹ کے لئے قابل ادائیگی کی رقم مقررہ . ہے اور معاہدہ میں قابل ادائیگی قسطوں اور ان کے مقررہ وقت کے ساتھ ہے ۔ فائل کی ایک میعاد اور حالت یہ بتاتی ہے کہ مقررہ تاریخ کے بعد تاخیر سے قسط جمع کروانے پر 0.05٪ قسط فی دن یا قسط کا 1.5٪ ہر ماہ surcharge وصول کیا جائے گا اور اگر دو قسطوں کو مقررہ وقت میں ادائیگی نہ کی جائے تو فائل منسوخ کردی جائے گی۔ برائے مہربانی رہنمائی کریں کہ کیا یہ سرمایہ کاری کرنا ٹھیک ہے ؟
(۲) برائے کرم یہ بھی رہنمائی کریں کہ اگر Surcharge خریدار کسی بھی قابل اضافی. کی ادائیگی نہیں کرتا ہے جیسا کہ معاہدے میں مذکور کے مطابق اپنی تمام قسطوں کو بروقت ادا کیا جاتا ہے ۔ کیا خریدار کے لئے اس طرح کی سرمایہ کاری کرنا ٹھیک ہوگا؟
(۳) اگر اس طرح کی سرمایہ کاری شریعت کے لحاظ سے ٹھیک نہیں ہے تو پھر چاہے پلاٹ فائل ہولڈر معاہدے کے اختتام تک سرچارجز کی ادائیگی کے بغیر تمام اقساط وقت پر ادا کرے یا کسی دوسری دلچسپی رکھنے والی فریق کو فروخت کرے کیوں کہ پلاٹ فائلوں کی پوری رقم کمپنی واپس نہیں کر سکتی ہے ۔

Published on: Oct 22, 2019

جواب # 173728

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:116-38/t/sn=2/1441



سوال میں یہ واضح نہیں ہے کہ ابتدائے عقد میں معقود علیہ (یعنی پلاٹ )مشخص اور متعین طور پر موجود ہوتا ہے یا نہیں؟ اگر موجود نہیں ہوتا تو یہ عقد بیعِ معدوم میں داخل ہونے کی وجہ سے شرعا جائز نہیں ہے، اگر موجود ہوتا ہے تو اس کی نوعیت واضح کی جائے کہ وہ کس اعتبار سے موجو ہوتا ہے؟ کیاسرمایہ کار اس پر قبضہ کرکے اپنے دخل میں لے سکتا ہے؟ یا کچھ اور نوعیت ہوتی ہے۔ نیز یہ بھی واضح کریں کہ فائل منسوخ کردینے کی صورت میں ادا کردہ رقم واپس ملتی ہے یا کمپنی اسے ضبط کرلیتی ہے؟ صورت مسئولہ سے متعلق یہ اور اس طرح کے دیگر بعض امور تشنہ ہیں، آپ مذکورہ بالا امور کی مکمل وضاحت کرتے ہوئے کمپنی کے جملہ اصول وضوابط ارسال کریں ؛تبھی اس میں سرمایہ کاری سے متعلق کوئی حتمی حکم لکھا جا سکتا ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات