معاملات - بیع و تجارت

India

سوال # 165100

براہ کرم، بتائیں کہ کیا اس طرح بزنس کرنا حلال ہے کہ ایک شخص پیسہ لگائے گا اور دوسرا شخص بزنس کرے گا اور منافع دونوں کے درمیان نصف نصف ہوگا؟ جزاک اللہ

Published on: Nov 1, 2018

جواب # 165100

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 110-164/B=2/1440



جی ہاں اس طرح بزنس کرنا صحیح ہے۔ اس کو شرکت مضاربت کہتے ہیں ایک آدمی کا پیسہ اور دوسرے کی محنت ہو اور دونوں نفع میں شریک رہیں۔ اگر خدانخواستہ کوئی نقصان ہوگیا تو وہ نقصان پہلے اصل تجارت و نفع میں سے منہا ہوگا۔ اس کے بعد اصل سرمایہ میں سے وضع ہوگا کام کرنے والے پر نقصان کا بار نہ ہوگا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات