معاملات - بیع و تجارت

Pakistan

سوال # 155754

جناب مفتیان کرام ،درج ذیل مسئلے میں آپ حضرات کی رائے معلوم کرنا چاہتے ہیں ۔ مسئلہ: ہمارے دیار میں کپاس کی خریدو فروخت اس طرح چلتی ہے کہ زمیندار کارخانے والے کو مثلا آج کپاس تول کر دیتا ہے اور زمیندار کارخانے والے کو کہتا ہے کہ 15 یا 20 دن کے بعد جو اس دن کپاس کا مارکیٹ میں ریٹ ہوگا وہی دن کے حساب سے ثمن وصول کروں گا۔ سوال یہ ہے کہ بیع کی مذکورہ بالا صورت جائز ہے کہ نہیں؟

Published on: Nov 16, 2017

جواب # 155754

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:147-123/M=2/1439



مذکورہ طریقے پر بیع کا معاملہ کرنا فاسد ہے کیوں کہ پندرہ یا بیس دن کے بعد مارکیٹ میں کپاس کا ریٹ کیا ہوگا یہ مجہول ہے تو ثمن میں جہالت پائی گئی جب کہ ثمن معلوم ومتعین ہونا چاہیے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات