معاملات - بیع و تجارت

INDIA

سوال # 146177

ہماری بستی اور دیگر قرب و جوار میں ایک رسم ہے کہ اگر کسی کے گھر میں کوئی انتقال کر جائے تو مرحوم کو ایصال ثواب پہنچانے کی غرض سے اس کی تدفین کے اگلے روز قرآن خوانی کی مجلس منعقد کی جاتی ہے اس میں قرآن اور دیگر دعا اور وظائف کا اہتمام کیا جاتا ہے ۔ کچھ دعا اور وظائف کھنے پینے کی چیزوں پر پڑھے جاتے ہیں (عموما چنے وغیرہ) تو کیا یہ چنے ہر ایک کے لئے کھانا جائز ہے یا نہیں اور کیا یہ محض؟غریب ہی کے لئے جائز ہے ؟

Published on: Nov 22, 2016

جواب # 146177

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 179-163/M=2/1438



مرحوم کے لیے ایصال ثواب توصحیح اور ثابت ہے لیکن اس کے لیے کوئی دن، تاریخ اور طریقہ لازم و متعین نہیں، تدفین میت کے اگلے روز اجتماعی قرآن خوانی کا اہتمام کرنا اور اس کے لیے باضابطہ مجلس منعقد کرنا اور کھانے پینے کی چیز پر دعا اور وظیفہ پڑھنے کے بعد اسے تقسیم کرنا وغیرہ اس طریقے کا التزام مکروہ اور ناپسندیدہ ہے، دن و تاریخ کی تعیین و تخصیص کے بغیر اور کسی غیر ثابت شدہ ہیئت کے التزام کے بغیر انفرادی طور پر جب جس قدر ہوسکے تلاوت قرآن کرکے یا نفلی نمازیں پڑھ کر یا صدقہ خیرات کرکے یا کسی بھی کار خیر کے ذریعہ ثواب میت کو پہنچایا جاسکتا ہے اگرچہ جس چنے پر وظیفہ وغیرہ پڑھا گیا ہو اس کو کھانا نا جائز نہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات